آنکھوں کی اوپری ڈھیلی جلد کیسے ٹائٹ کریں اور ایسی جلد پر آئی لائنر کیسے لگائیں

آنکھوں کی اوپری جلد اگر ڈھیلی پڑ جائے تو اُسے ٹائٹ کرنے کے ساتھ سکڑی ہوئی جلد پر آئی لائنر کیسے لگایا جا سکتا ہے

جلد میں کھچاؤ کم ہونے کے باعث جلد ڈھیلی پڑجاتی ہے اور یہ بڑھتی ہوئی عمر کی علامت ہے۔ آنکھوں کے گرد موجود جلد کے ساتھ آنکھوں کی اوپری سطح خاص طور پر متاثر ہوتی ہے کیونکہ اس حصے کی کھال پتلی ہوتی ہے اور اس سے بڑھتی عمر کا اثر زیادہ نظر آتا ہے۔

اپنی آنکھوں کو جوان رکھنا چاہتے ہیں تو کچھ طریقوں پر عمل درآمد کرکے آپ اپنی آنکھوں کو تروتازہ اور جوان رکھ سکتے ہیں۔

ورزش کو اپنا معمول بنا لیں اس سے پپوٹوں کے مسلز سیدھے رہتے ہیں ورزش کی مدد سے ڈھلی جلد ختم ہونی شروع ہوجاتی ہے۔

لندن میں موجود Eva Fraser Fitness Center اس بات کا دعویٰ کرتا ہے کہ پپوٹوں کے لئے روزانہ دس منٹ ورزش کرنے سے ان کی ڈھلی جلد کو ٹائٹ کیا جاسکتا ہے۔ اس ورزش کو اگر ہفتے میں چار مرتبہ بھی کیا جائے تو بھی انتہائی مثبت نتائج موصول ہوتے ہیں۔ اس ورزش کو کرنے کا آسان طریقہ یہ ہے کہ اپنی آئی بروزکو اونچا کر کے برو کی ہڈی پر انگلی رکھیں۔ اپنی آنکھوں کو بہت مرتبہ حرکت دیں اور پوری بند کرنے سے گریز کریں ہر پوزیشن پر تقریباً چھ سیکنڈ کے لیے رک جائیں۔ آنکھیں کھولیں اور یہ عمل دہرائیں۔

FireShot Capture 547 - 2268_erika_times_four.jpg (377×300)_ - http___www.myvmc.com_uploads_VMC_T.png

کسی ایسی کریم کا استعمال کریں جو جلد ٹائٹ کرنے کے لئے خاص طور پر تیار کی گئی ہو یا پھر عمر چھپانے کے لیے استعمال کی جاتی ہو۔ ہمارے ماہرین یہ تجویز کرتے ہیں کہ ایسے مصنوعات کا استعمال کاریگر ثابت ہوتا ہے جن میں کوپر پیپٹائڈ شامل ہو یہ کیمائی اجزاء جلد سخت کرنے کے ساتھ اس پر موجود غیر ضروری اور بدنماں لکیریں بھی ختم کر دیتے ہیں۔ مصنوعات کا لیبل پڑھنا نہ بھولیں کسی بھی چیز کو استعمال کرنے سے قبل ہی اس کی مکمل معلومات حاصل کرلیں۔ کچھ کریمیں پپوٹوں پر استعمال نہیں ہوتیں بلکہ آنکھوں کے قریبی حصوں پر لگائی جاتی ہیں جس کی مدد سے مطلوبہ نتائج حاصل کئے جاتے ہیں۔

maxresdefault.jpg

آنکھوں کو جوان رکھنے کےلئے کچھ باتیں ہیں جن میں سے کچھ پر عمل کرنے کی ضرورت ہے اور کچھ باتوں سے بچنا چاہئے۔ تاکہ آپ اپنی آنکھوں کو ہمیشہ جوان رکھ سکیں۔

عمل کرنے کی باتیں

  • ایسی خورک کھائیں جو آپ کی جلد کےلئے فائدہ مند ہو جیسے وٹامن اے اور گاجر وغیرہ۔ ہمیشہ ایسی ڈائیٹ لیں جو تازہ پھلوں اور سبزیوں سے بھرپور ہو۔ ماہر غذائیت کی طرف سے مشورہ دیا جاتا ہےکہ سبزپتوں والی سبزیوں کھائیں۔

Health-Food-for-eyes.jpg

·        جب بھی گھر سے باہر جائیں آنکھوں کی حفاظت کے لئے عینک لگائیں۔ عینک لگانے سے آپ کی آنکھیں جھریوں سے بچ جائیں گی۔  آنکھ کی انفیکشن کے کسی بھی قسم سے بچنے کی کوشش کریں اور آنکھوں کو ہمیشہ ہاتھ دھو کر چھوئیں۔ ·  اپنی آنکھوں کو آرام دیں

۔جن باتوں سے آپ کو بچنا چاہئے·        سورج اور دوسرتیز  روشنی کو براہ راست گھورنے سے پرہیز کریں کیونکہ  یہ آپ کی آنکھ کے پپوٹوں کے لئے بہت نقصان دہ ہو سکتا ہے ۔

·        مسلسل ٹی وی اور ڈیسک ٹاپ کو نہ دیکھے۔·

    رات میں آٹھ گھنٹے سے کم نیند سے بچیں اور نیند پوری کریں

۔ڈھلکی ہوئی جلد کو ٹائٹ کرنے کےلئے گھریلو ٹوٹکےانڈے کی سفیدی

سب سے پہلے اس بات کا یقین کر لیں کہ آپ کی آنکھوں پر میک اپ نہیں ہونا چاہئے۔ایک انڈے کی سفیدی لیں اور   cotton swab کو اس میں ڈِپ کریں۔ اب پپوٹے کی کریز پر  cotton swab کو  ملیں۔ اپنی آنکھوں کو بند رکھیں جب تک انڈے کی سفیدی خشک نا ہو جائے۔ گھریلو لوشناپنی آنکھوں کو جوان رکھنے کےلئے قدرتی اجزاء پر مشتمل ایک لوشن بنائے۔ اس کےلئے دو کھانے کے چمچ دہی،  دو کھانے کے چمچ کھیرا،   ایک کھانے کا چمچ  دلیا،  دو کھیرے کے پیسے ہوئے ٹکڑے لیں اور ان سب کو مکس کر لیں کہ ایک پیسٹ بن جائے۔ اس پیسٹ کو پپوٹوں پر لگا کر بیس منٹ کےلئے چھوڑ دیں اور پھر نارمل پانی سے دھو لیں۔

EP-130839893.jpg

 ڈھلکی ہوئی جلد پر آئی لائنر کا استعمال کیسے کیا جاتا ہے؟

  • آئی لائنر کے استعمال کے لیے ضروری ہے کہ پینسل آئی لائنر کا استعمال کیا جائے لیکوئڈ آئی لائنر ڈھیلی جلد پر استعمال کے لیے بہت سخت ہے۔
  • پپوٹوں کے اوپر سیاہ آئی لائنر پینسل کی مدد سے لائنر لگائیں کوشش کریں کہ لائینر موٹا نا ہو پلکوں کے تین چوتھائی حصے کے برابر لائن بنائیں اور اندرونی کونوں کو خالی چھوڑ دیں۔ اگر آپ موٹا لائنر لگائیں گے تو یہ آپ کی پلکوں کے درمیان میں داخل ہوجائے گا۔

FireShot Capture 546 - 2PdoFsBI85k.jpg _ - https___pp.vk.me_c619222_v619222247_21094_2PdoFsBI85k.jpg.png

  • آپ کو بے شمار میک اپ آرٹسٹ نے یہ مشورہ دیا ہوگا کہ آپ اندرونی پپوٹوں کی اندرونی سطح پر لائنر کا استعمال نہیں کریں کیونکہ اس سے آپ کی آنکھوں کے گرد موجود خلقے اور جھائیاں مزید نمایاں ہوں گی ۔لیکن اگر آپ اندرونی جانب لائنر کا استعمال نہیں کریں گے تو آپ کی آنکھیں پھیکی اور نامکمل لگیں گی۔ آنکھوں کو پر کشش بنانے کے لیے اندرونی جانب بھی لائنر کی پتلی لائن لگائیں اور یہاں بھی بیرونی کونے خالی چھوڑ دیں جبکہ اندرونی کونوں پر لائنر کی پتلی لائن لگائیں۔

safe-to-moisturize-eyelids-1.jpg

  • جھریوں والی آنکھوں کے لیے لائنر کی مزید ٹپس یہ ہیں کہ سیاہ لائنر کے اوپر کریمی سفید لائنر کا استعمال کریں۔یہ ٹپ سب کے لیے یکساں مفید نہیں ہوتی لیکن کچھ لوگوں پر بہت اچھا اثر نظر آتا ہے۔ آپ لگا کر دیکھیں کہ یہ آپ کے چہرے پر کیسے نتائج دے رہا ہے۔ سیاہ لائنر پر سفید لائنر کی پتلی لائن لگائیں اس سے سیاہ لائنر کی تیزی اور سختی کم ہوجائے گی۔ اس سے آنکھوں کے گرد جھریاں بھی ماند پڑ جائیں گی۔

images

  • سفید لائنر کو استعمال کرنے کا آسان طریقہ یہ ہےکہ ناک کے پاس سے آنکھوں کے اندرونی کونے سے لائنر لگانا شروع کریں اور درمیان میں چھوڑ دیں۔
  • اگر سفید لائن بہت واضح ہورہی ہے تو آپ اس کو آئی شیڈ برش کی مدد سے دھندلا بھی کر سکتی ہیں اس سے قدرتی نکھار آجائے گا اس کے علاوہ اس کی جگہ آف وائٹ پینسل کا استعمال بھی کیا جا سکتا ہے۔

Winged-Liner-5.png

  • اب آنکھوں کے میک آپ کا اختتام کرتے ہوئے مسکارہ لگائیں لیکن اگر آپ کی آنکھیں موٹی ہیں تو مسکارے کا استعمال ترک کردیں۔

fe88b7fd59d628bdf60a7ce7112c4a35.jpg

آنکھوں کی خوب صورتی کے لیے چند مفید گھریلو ٹپس

بے شک آنکھیں ہمارے جسم کے تمام اعضا میں حساس ہونے کے ساتھ ساتھ سب سے قیمتی بھی ہیں۔ آنکھیں ہمارے چہرے کے بالکل درمیان میں ہوتی ہیں، جن پر قدرت نے حفاظت کے لیے انسانی جلد کے ٹشوز سے بنا ہوا ایک ڈھکن نما پپوٹا بھی رکھ دیا ہے۔ یہ آنکھوں کو ہر نقصان دہ چیز سے مکمل طور پر بچاتا ہے، مثلاً تیز روشنی، تھکن اور گردو غبار یا آلودگی وغیرہ۔

Eye-Care-in-Winter.jpg

ان ہی عوامل کو دیکھ کر ہمیں اندازہ ہوتا ہے کہ ہماری آنکھیں کتنی نازک اور حساس ہوتی ہیں۔ فی زمانہ جس قسم کا میک اپ عام ہے اس میں بھی آنکھوں کی خوب صورتی کو سب سے زیادہ فوکس کیا جاتا ہے، لیکن بھلا ہو بیوٹی ایکسپرٹس کا جو میک اپ سے عاری اور بری لگنے والی آنکھوں کو بھی نہایت خوب صورت انداز میں پیش کرتے ہیں۔ 

ایسے میں ذرا سوچیں کہ اگر آنکھیں قدرتی طور پر بے حد خوب صورت ہوں تو پھر ان پر میک اپ واقعی سونے پر سہاگے کا کام کرے گا۔ سب سے پہلے تو میک اپ کے لیے آنکھ کا صحت مند ہونا ضروری ہے، اگر آنکھ صحت مند نہ ہو گی تو میک اپ بھی کچھ خاص اثر نہیں ڈال سکے گا۔ 

ہمارے ماحول میں موسم کی تبدیلی کے ساتھ ہی فضا میں پائی جانے والی آب و ہوا اور مختلف لہریں تبدیل ہو جاتی ہیں۔ یہی مختلف اقسام کی لہریں آنکھوں کی صحت پر گہرا اثر ڈالتی ہیں۔ تیز سفیدی آنکھوں کے لیے نقصان دہ ثابت ہوتی ہے۔ آپ محسوس کریں گے کہ تیز دھوپ میں رہنے کے بجائے اگر آپ تاریکی میں رہیں تو آنکھوں کو ٹھنڈک محسوس ہوتی ہے اور دھوپ میں نکلنے سے پہلے ان ہی لہروں سے بچنے کے لیے سن گلاسز کا استعمال کرتے ہیں۔

وہ لوگ جو سردیوں کے موسم میں اسکیٹنگ کرتے ہیں، آپ نے غور کیا ہو گا کہ جب سورج کی تیز لہریں چمکیلی سفید برف سے ٹکرا کر براہ راست ان کی آنکھوں پر پڑیں تو ان کی آنکھیں انھیں برداشت نہیں کر سکتیں اور کھلی نہیں رہ سکتیں۔

dry_skin_around_eyes_cure

آنکھوں کے بارے میں جیسا کہ تقریباً سب ہی جانتے ہیں کہ آنکھ کی پتلی، اس کی پلکیں اور کے اردگرد کی جلد نہایت نازک ہوتی ہے اور اسی نازک اور باریک سی جلد کے لیے مناسب نمی کا ہونا بھی بہت ضروری ہے۔ Dehydration یعنی پانی کی کمی آنکھوں کے لیے بے حد نقصان کا باعث ہے۔ اس حصے میں اگر ذرا بھی بداحتیاطی سے کام لیا جائے تو اس حصے کی جلد اور تمام چہرے کی جلد کا رنگ تبدیل ہو جاتا ہے۔ اکثر آنکھوں کے گرد سیاہ حلقے بن جاتے ہیں جو اس بات کی نشانی ہیں کہ آنکھوں کی مناسب دیکھ بھال یا انھیں مناسب نیند کے ساتھ آرام نہیں مل رہا۔ اس سلسلے میں آپ ہائیڈریٹننگ انڈر آئی سیرم کا استعمال کر سکتی ہیں۔ 

dry-skin-around-eyes.jpg

آنکھوں میں اگر بے آرامی کی وجہ سے جلن یا سوجن وغیرہ ہو تو اس کے لیے جلد از جلد آئی اسپیشلسٹ سے رجوع کریں اور اپنی آنکھوں کا مکمل معائنہ کروائیں۔ آنکھوں کی صحت کے لیے ایک اور تدبیر یہ ہے کہ جب بھی مصنوعی روشنی میں لکھنے پڑھنے کا عمل انجام دیا جائے تو اس وقت روشنی کا خاص خیال رکھا جائے۔ روشنی نہ تو ضرورت سے زیادہ ہو اور نہ ہی کم اور اس کی ڈائریکشن کو بھی مدنظر رکھا جائے۔ روشنی کی ڈائریکشن سے مراد ہے کہ روشنی یا تو بائیں جانب سے ٹیبل پر آئے یا پھر دائیں جانب سے۔ آنکھوں کے عین سامنے سے روشنی منعکس ہو کر آنکھوں میں پڑنا درست نہیں ہے۔

eye+care.jpg

اگر آپ کے معمولات میں لکھنے یا پڑھنے کا کام شامل ہے یا آپ رات کو دلچسپی سے ناول وغیرہ پڑھنے کی شوقین ہیں تو ہر ایک گھنٹے کے بعد دس منٹ کا وقفہ لیں اور تقریباً ایک یا آدھے منٹ تک انھیں گھڑی کی سوئیوں کی ڈائریکشن میں گھمائیں۔ کوشش کریں کہ اپنی تمام نیند رات کو ہی پوری کر لیں کیوں کہ دن میں یا تو سونے کے لیے مناسب حالات میسر نہیں ہوتے اور اگر آپ دن میں کسی وقت سوئیں بھی تو اس کی نیند رات کی نیند کا نعم البدل کبھی بھی نہیں بن سکتی۔ ماہرین کے مطابق ایک رات کی مکمل دس گھنٹے کی نیند ہفتے کے سات دنوں کی نیند سے بہتر ہے۔ 

FoodForBetterEyesight.png

رات کو سونے سے قبل یاد سے آئی میک اپ اتار کر سوئیں اور مسکارہ وغیرہ اتار کر آنکھوں کو ایک بار ٹھنڈے پانی سے دھو لینے کے بعد بستر کا رخ کریں۔ آنکھوں کے لیے سب سے مفید وٹامنز میں وٹامن اے ہے جسے آپ تقریباً تمام پیلے اور نارنجی رنگوں کے پھلوں سے حاصل کر سکتے ہیں۔ مثلاً گاجر، خوبانی، آم وغیرہ۔ سبزیوں میں پالک آنکھوں کے لیے مفید ہے۔

Health-Food-for-eyes.jpg

 مسلسل ذہنی دباؤ نہ صرف جسم پر اثر انداز ہوتا ہے بلکہ آنکھوں کی دلکشی زیادہ متاثر ہوتی ہے۔ نیز یہی ذہنی دباؤ اور تناؤ اکثر اوقات بے خوابی کا سبب بنتا ہے۔ آنکھوں کی صحت اور حُسن برقرار رکھنے کے لیے ذہنی دباؤ اور تناؤ کو دور کرنے کی ضرورت ہے، اگرچہ کلیتاً اس پر قابو نہیں پایا جا سکتا ، مگر یہ کوشش ضرور کرنا چاہیے کہ پریشان کن باتوں کے اثرات مختلف طریقوں اور مختلف مصروفیات سے زائل کیے جاتے رہیں ورنہ یہ مسلسل ذہنی دباؤ، ڈیپریشن کا راستا کھول دیتا ہے۔

چند گھریلو ٹپس

٭ دو عدد کاٹن بالز ٹھنڈے دودھ میں بھگو کر انھیں دس منٹ کے لیے اپنی آنکھوں پر رکھ لیں۔

٭آپ کھیرے کے اکسٹریکٹ سے بنے پیڈز بھی استعمال کرسکتی ہیں جو آپ اپنے ساتھ ہر جگہ پرس میں ساتھ لے جاسکتی ہیں

coolandcoolcucumbereyepads_500x500__29656.1425723226.1280.1280

Cool & Cool Cucumber Eye Pads خریدنےکے لئے آرڈر کریں 

download (1)

٭ آنکھوں کے نیچے آئی بیگز سے چھٹکارہ حاصل کرنے کے لیے استعمال شدہ ٹی بیگز ٹھنڈے پانی میں بھگوئیں اور انھیں آنکھوں پر رکھیں۔

Potato-Slice1

٭ آنکھوں کو ری فریش کرنے کے لیے کھیرے  ککڑی یا کچے آلو کے قتلے اپنی آنکھوں پر رکھیں۔

eye-care-tips

٭ آئی برو کی شائن کے لیے گلوس کا استعمال کریں اور اُن کی شیپ بنانے کے لیے جیل پینسل کا استعمال کریں۔

٭ بہرحال آپ کی آنکھوں کا انداز کچھ بھی ہو لیکن ان پر میک اپ اُسی صورت میں سوٹ کرے گا جب یہ خوب صورت نظر آئیں گی اور ظاہر ہے کہ آنکھوں کی قدرتی خوب صورتی کے لیے ان کی صحت کا خیال رکھنا بے حد ضروری ہے۔

BUY Vince Hydrating Eye Recovery Serum

The Body Shop Moisture White Shiso Eye Serum

UNDER-EYE CREAM

Cool & Cool Cucumber Eye Pads

EYE MAKEUP PRODUCTS 

ageless_eyes_side_effects.jpg

مصنوعی پلکیں لگانے کا عمدہ طریقہ جانیےساتھ صحیح پروڈکٹ کا انتخاب بھی

 

پلکیں لمبی اور گھنی کرنے کا طریقہجانیے اور کون سی مصنوعات کا استعمال کرنا چاہیے یہ سب معلوم ہونا ضروری ہے

آنکھیں چہرے کا سب سے حسین اور نمایاں حصہ ہوتی ہیں اگر آنکھیں خوبصورت ہوں تو ہر نگاہ اپنی جانب کھینچ لیتی ہیں۔ آنکھوں کی کشش جہاں خواتین کے حسن کو چار چاند لگا دیتی ہے وہیں بڑی پلکیں آنکھوں کے حسن دوبالا کردیتی ہیں۔ لیکن آکثر خواتین چھوٹی پلکوں کی وجہ سے مایوس نظر آتی ہیں۔ لیکن اب ایسی خواتین کو مزید پریشان ہونے کی ضرورت نہیں کیونکہ آج کے ترقی یافتہ دور کی جدید ٹیکنالوجی نے جہاں خواتین کے بے شمار مسائل کا حل نکال لیا ہے وہیں پلکیں بڑی کرنا بھی اب بائیں ہاتھ کا کھیل ہے۔ آج ہم آپکو کچھ مصنوعات کی مدد سے پلکیں گھنی اور بڑی کرنے کا آسان طریقہ بتائیں گے۔

Apply-false-eyelashesmaxresdefault (1)

اوری فلیم کے آئی لیش کرلر

سب سے پہلے اوری فلیم کے آئی لیش کرلر کی مدد سے اپنی پلکوں کو بڑا کریں اگر آپ بڑی پلکیں چاہتے ہیں تو اس عمل کو لازمی کرنا ہوگا اس کی مدد سے آپکی پلکوں کی نوکیں اوپر کی جانب گھوم جائنگی اور دیکھنے میں بہت پر کشش اور گھنی لگیں گی۔

لورئیل پرییس ولیمائز کا واٹر پروف مسکارا

how-get-long-eyelashes-tips-tricks-products-work_94129

اب اپنی پلکوں پر لورئیل پرییس ولیمائز کا واٹر پروف مسکارا استعمال کریں یہ مسکارا پلکوں پر موجود کرلز کو محفوظ رکھنے میں کارآمد ثابت ہوگا۔

how-get-long-eyelashes-tips-tricks-products-work_94128

مصنوعی پلکیں لگانا

مسکارے کا پہلا کوٹ سوکھنے سے پہلے ٹالکم پاؤڈر یا لوز پاوڈر کو اپنی پلکوں پر لگائیں۔ یہ آپ کی پلکوں سے جڑ کر انہیں گھنا، لمبا اورچمکدار بنانے میں مددگار ثابت ہوگا۔ 

اس کے فوراً بعد مسکارے کا ایک اورکوٹ لگائیں تاکہ یہ پاؤڈر کے ساتھ چپک جائے اور پاؤڈر کا سفید رنگ بھی چھپ جائے۔

FireShot Capture 389 - How to Get Long Eyelashes_ Tips, Tric_ - http___www.divinecaroline.com_beau

اب نیچے کی پلکوں پر اچھی طرح مسکارا لگائیں تاکہ آپ کی پلکیں برابر ہوجائیں۔

FireShot Capture 386 - How to Get Long Eyelashes_ Tips, Tric_ - http___www.divinecaroline.com_beau.png

اب اوپر کی پلکوں کے نیچے کی جانب لورئیل پیرس کاجل پینسل لائنر کی مدد سے ٹائٹ لائن بنائیں یہ آپ کی پلکوں کی سطح کو موٹا اور پختہ کردے گا اور آپ کی پلکیں مزید بڑی نظر آئیں گی۔

FireShot Capture 391 - How to Get Long Eyelashes_ Tips, Tric_ - http___www.divinecaroline.com_beau.png

اب اپنی پلکوں پر مصنوعی پلکیں لگائیں یہ پلکیں پوری نہیں بلکہ آدھی ہوں گی جو آپ کی پلکوں کے آخری کونے میں لگیں گی یہ آپ کی آنکھوں کو باقائدہ گول شکل (shape )دیں گی۔ آدھی پلکیں لگانے میں بھی آسان ہیں۔

how-get-long-eyelashes-tips-tricks-products-work_94127

اضافی تدابیر

کوشش کریں کے اپنی پلکوں پر دو طرح کے مسکاروں کا استعمال کریں ایک اس طرح کا مسکارا ہو جس کو لگا کر پلکیں گھنی لگیں اور دوسرے مسکارے کی خوبی انہیں لمبا کرنا ہو ان دونوں خوبیوں کے مسکارے استعمال کر کے آپکی پلکیں بڑی اور گھنی دیکھیں گی۔ آنکھوں پر لائنر کی موٹی لائن کا استعمال نہ کریں ۔ یہ عمل مکمل کر کے آپ کی آنکھیں مزید حسین اور دلکش نظر آئیں گی۔

FireShot Capture 394 - How to Get Long Eyelashes_ Tips, Tric_ - http___www.divinecaroline.com_beau

BUY LOREAL PARIS WATERPROOF  MASCARA

BUY EYELINER KAJAL PENCIL

BUY EYELASH CURLER

BUY LOOSE POWDER 

آنکھوں کے گِرد سیاہ حَلقے : اسباب اور احتیاطی تدابیر

آنکھوں کے گِرد سیاہ حَلقے

dark-circles-

اسباب اور احتیاطی تدابیر

روز مرّہ کے انتہائی مشینی معمولات، تھکن اور ذہنی دباؤ سے بھر پور زندگی بہت سے امراض پیدا کر رہی ہے۔ بیماریوں کے اس جم غفیر میں آنکھوں کے گرد حلقے پڑ جانا بڑی معمولی سی بیماری لگتی ہے مگر خواتین کے لیے یہ بہت پریشانی کا باعث ہے، کیوں کہ اس سے چہرے کی خوب صورتی ماند پڑ جاتی ہے۔ میک اپ کا سہارا لینا پڑتا ہے۔ روز افزوں اضافے کی صورت میں یہ سیاہ یا بھورے حلقے کسی اچھے سے اچھے ’’ڈسٹمپر‘‘ کے کئی کوٹ کر ڈالنے کے بعد بھی اپنے وجود کا احساس دلاتے ہیں۔ ان کا تدارک کیجیے تاکہ آپ کا چہرہ بغیر میک اپ کے بھی دلکش نظر آئے۔ ان وجوہ پر غور کریں کہ آپ کی آنکھیں کس وجہ سے حلقوں کا شکار ہیں؟

بے خوابی

کسی دماغی عارضے، ذہنی پریشانی، زیادہ کام، دماغی خشکی، بے کاری اور کاہلی، خیالات کی زیادتی، ذہنی تھکن کی انتہا یا رنج و غم کو حاوی رکھنا بے خوابی کو جنم دیتا ہے۔ رات میں جاگتے رہنے سے اور اپنے ذہن اور آنکھوں کو پریشان رکھنے کے باعث ردّعمل کے طور پر آنکھوں کے گرد حلقے بن جاتے ہیں۔

پانی کی کمی

پانی کی کمی مجموعی طور پر پورے جسم کو کمزور کر دیتی ہے۔ دست اور اُلٹیوں کے علاوہ لمبی بیماری اور فلوئیڈز کا ضائع ہو جانا جسم کو سُکھا دیتا ہے۔ جِلد خشک، کُھردری اور بے رونق ہو کر لٹک جاتی ہے۔ چہرے کی جِلد سب سے زیادہ نازک اور حساس ہوتی ہے س لیے سب سے زیادہ متاثر ہوتی ہے اور Dehydration کی وجہ سے آنکھیں اس مرض کا شکار ہو جاتی ہیں۔

بے آرامی

محنت میں عظمت ہے، لیکن شدید محنت کا دباؤ ، خواتین کے لیے نقصان دہ ہوتا ہے۔ ان کی جسمانی ساخت اور قوت کار کی کمی، ناقابلِ برداشت محنت سے انکار کرتی ہے گو کہ مناسب جسمانی محنت از حد ضروری ہے، مگر سخت محنت و مشقت مسلسل بے آرامی جسم کے ہر نظام میں خلل پیدا کر سکتی ہے اور شدید تھکاوٹ کا اثر بالعموم سب سے پہلے آنکھوں کے نیچے نظر آتا ہے۔

نسوانی امراض

لیکوریا اور دوران ایّام درد کی شکایت کی وجہ سے بھی آنکھوں کے گرد حلقے بن جاتے ہیں، یوں بھی ان تکالیف کے علاج کی طرف فوری متوجہ ہونا چاہیے۔ چھوٹی بچیوں میں بھی بعض اوقات لیکوریا کا مرض پلتا رہتا ہے اور اکثر ماؤں کا اس طرف دھیان نہیں جاتا، جس کے نتیجے میں بچیاں سُوکھتی چلی جاتی ہیں۔ رنگت خراب ہو جاتی ہے۔ کمزوری اور ٹانگوں اور کمر کے درد کی مستقل شکایت رہنے لگتی ہے۔ ان کی آنکھیں اندر کو دھنس جاتی ہیں اور ان کے گرد حلقے پڑ جاتے ہیں۔

تازہ ہوا کی کمی

تنگ و تاریک جگہ پر رہنے اور تازہ ہوا کی کمی سے بھی آنکھوں کے گرد حلقے پڑ جاتے ہیں۔

دورانِ حمل

حمل کے دوران آنکھوں کے گرد حلقے پڑنا بہت عام ہے۔ اسے صرف آرام اور متوازن غذا سے دور کیا جا سکتا ہے، چوں کہ غذا کا بڑا حصہ تو Fetus کو مل جاتا ہے اس لیے اچھی کوالٹی کی غذا کافی مقدار میں استعمال کریں۔

ذہنی دباؤ

مسلسل ذہنی دباؤ نہ صرف جسم پر اثر انداز ہوتا ہے بلکہ آنکھوں کی دلکشی زیادہ متاثر ہوتی ہے۔ نیز یہی ذہنی دباؤ اور تناؤ اکثر اوقات بے خوابی کا سبب بنتا ہے۔ آنکھوں کی صحت اور حُسن برقرار رکھنے کے لیے ذہنی دباؤ اور تناؤ کو دور کرنے کی ضرورت ہے، اگرچہ کلیتاً اس پر قابو نہیں پایا جا سکتا ، مگر یہ کوشش ضرور کرنا چاہیے کہ پریشان کن باتوں کے اثرات مختلف طریقوں اور مختلف مصروفیات سے زائل کیے جاتے رہیں ورنہ یہ مسلسل ذہنی دباؤ، ڈیپریشن کا راستا کھول دیتا ہے۔

خون کی کمی

سیاہ حلقوں کی یہ بہت بڑی وجہ ہے، اس کے لیے متوازن غذا وٹامنز، کیلشیم اور آئرن کا استعمال ڈاکٹر کے مشورے سے کرنا چاہیے۔ بعض اوقات آنکھوں کے حلقوں کی وجہ نشاستے کا زیادہ استعمال بھی ہو سکتا ہے۔

پیٹ کے کیڑے

یہ بھی ایک عام وجہ ہے۔ خصوصاً بچوں کے پیٹ میں کیڑے ہو جانے سے تو بہت جلد بہت گہرے حلقے بن جاتے ہیں۔ نمایاں علامات کی موجودی کے باوجود بھی یہ بچوں کا مرض سمجھے جانے کی وجہ سے عموماً لوگوں کے دھیان میں نہیں آتا،لہٰذا وہ علاج کی طرف متوجہ نہیں ہوتے۔

بلا ارادہ آنسو نکلنا

یہ مرض آنسوؤں کے زیادہ اخراج کی بِنا پر آنکھوں کے اندر خرابیاں پیدا کرتا ہے۔ آنکھوں پر مردنی چھا جاتی ہے، بعض اوقات آنکھوں کے نیچے حلقے پڑ جاتے ہیں۔

یہ تمام وجوہ پڑھنے کے بعد آپ خود بھی کافی حد تک اندازہ کر سکتی ہیں کہ ان میں سے آپ کس مسئلے سے دوچار ہیں۔ اسی کی مناسبت سے آپ اپنی اس تکلیف کا تدارک کریں۔غذا میں دودھ، تازہ سبزیاں اور پھل ضرور شامل کریں۔ متوازن غذا لیں۔ اداسی اور تناؤ کی حالت سے نکلیں اور شدید جسمانی مشقت سے پرہیز کریں۔

سستی، کاہلی بے کاری اور غیر متوازی معموملات سے گریز کریں۔

مناسب آرام اور تفریح بھی صحت کے لیے ضروری ہے۔صبح فجر کی نماز کے بعد سورج نکلنے سے قبل تازہ ہوا میں ٹہلنے اور گہرے سانس لینے کی کوشش کریں۔

شبنمی گھاس پر چہل قدمی آنکھوں کے حلقوں کا مجرب علاج ہے۔

بھر پور نیند لیں، اگر دن میں سونے کی وجہ سے رات کی نیند پر اثر پڑتا ہو تو دن میں آرام نہ کریں… رات کی نیند کا نعم البدل کچھ بھی نہیں ہوتا۔پانی زیادہ پیئیں، اگر پانی کی کمی ہو تب تو یہ بہت ہی ضروری ہے۔

آنکھوں کے حلقوں کے لیے ڈاکٹر کے مشورے سے ادویات استعمال کریں۔ کوئی قابلِ اعتماد کریم یا لوش بھی بیرونی طور پر ایک حد تک مفید ہوتا ہے،مگر جب تک اصل سبب یا بیماری دور نہ ہو تو یہ سمجھ لیں کہ بیرونی ادویا کا استعمال شفایاب کر دے گا، غلط فہمی ہو گی۔ نیز ادویات یا کریم کے استعمال کا خود ’’تجربہ‘‘ کرنے سے گریز کریں۔