چکنی جلد سب سے زیادہ پریشان کرنے والی جلد کی دوسری قسم ہے

چکنی جلد

سب سے زیادہ پریشان کرنے والی جلد کی دوسری قسم ہے۔ گرمیوں میں خاص طور پر اس جلد کی وجہ سے بہت سے مسائل پیدا ہوتے ہیں۔

پہچان

آئلی جلد کی پہچان یہ ہے کہ اکثر اس جلد پر دانے ہوتے ہیں۔ اگر دانے نہ بھی ہوں تو بلیک ہیڈز یا ہلکے ہلکے سوراخ سے جلد کے اندر ضرور نظر آئیں گے۔ آپ کسی ٹشو کو منہ پر رکھ کر دبائیں ٹشو کے ساتھ آئل سا لگ جائے گا اس کا مطلب ہے کہ یہ آئلی سکن ہے۔ گرمیوں میں یہ جلد خاص طور پر زیادہ آئلی رہتی ہے جسے دیکھنے سے ہی منہ پر آئل نظر آتا ہے۔

8-15-2013-OILY-SKIN.png

وجہ

کچھ لوگوں کی جلد پیدائشی ہی آئلی ہوتی ہے۔ مگر زیادہ تر لڑکیوں میں تیرہ اور چودہ سال کی عمر میں اس طرح کا مسئلہ پیدا ہوتا ہے۔ ہارمونز کی تبدیلی سے بھی جلد چکنی ہوجاتی ہے۔ پھر جب احتیاط نہیں کی جائی تو اس جلد کے مسائل بڑھ کے pimples کی شکل اختیار کر لیتے ہیں۔

چکنی جلد کے مسائل

چکنی جلد کو ویسے سارا سال ہی مسائل کا سامنا رہتا ہے۔ مگر گرمیوں میں خصوصاً اس جلد کو سے پہلے تیرہ چودہ سال کی عمر میں ہار مونز Active ہو کر اس جلد کو متاثر کرتے ہیں اس پر دانے نمایاں ہونے لگتے ہیں۔ کھلے مسام بھی اس جلد کے مسائل میں سے ایک ہے۔ ان کھلے مساموں کے اندر جب دن بھر کی دھول مٹی یا پسینہ جاتا ہے تو infaction ہونے کا سبب بنتا ہے۔ پھر سب سے زیادہ مسئلہ اس وقت ہوتا ہے جب یہ انفکیشن بڑھ کر سارے چہرے پر آجاتا ہے اور اپنے نشان چھوڑ جاتا ہے۔ چکنی چیزیں اور کھٹی چیزیں کھانے سے بھی چکنائی زیادہ ہو جاتی ہے۔ بہت زیادہ دھوپ اور گرمی جلد کو بہت خراب کر دیتی ہے۔

چکنی جلد کے لیے حفاظتی اقدامات

جن لوگوں کی جلد تیرہ چودہ سال کی عمر سے چکنی ہو جائے اور مسائل پیدا ہونے لگیں تو اگر وہ اسی وقت احتیاط کرنا شروع کردیں تو پھر اس جلد کے مسائل پر قابو پایا جا سکتا ہے۔ اس حوالے سے ہم آپ کو چند تدابیر بتاتے ہیں۔

·         اگر Acne شروع ہو جائے تو سب سے اہم احتیاط ہے جلد کو Acne سے پاک کرنا اور اس کے لیے ضروری ہے روزانہ دوٹائم کسی بھی اچھے ٹونر سے چہرے کو صاف کرنا۔ اس کے لیے ٹونر کا آگے ذکر کریں گے۔

·         دھوپ س اس جلد کو بچانے کے لیے sun block استعمال کریں۔

·         زیادہ تر Acne صابن استعمال کریں

·         دن میں کم از کم آٹھ سے دس گلاس پانی پئیں۔ اگر پانی میں لیموں نچوڑ کر پئیں تو بہت فائدہ ہوگا۔

·         کم از کم چار سے پانچ مرتبہ منہ دھوئیں خاص طور پر صبح اور سونے سے پہلے۔

·         اگر دھول (مٹی) میں جانا ہو جیسا کہ آج کل تو یہ عام چیز ہے تو باہر سے آکر ٹونر کے ساتھ منہ ضرور صاف کریں۔

·         گرمیوں میں روزانہ ایک یا دو مرتبہ آئسنگ ضرور کریں۔

·         بلیچ Face  ویکس۔ وغیرہ میں احتیاطی تدابیر کا خیال رکھیں۔

·         اگر بلیک ہیڈز ہو جائیں تو انھیں دباکر ہاتھوں سے نہ نکالیں اس طرح یہ نشان چھوڑ جائیں گے اور انفکیشن بھی ہو جائے گی۔

·         سٹیم لے کر بلیک ہیڈز ریموو کریں مگر احتیاط ضروری ہے۔

.Diet-Tips-To-Reduce-Oily-Skin-Naturally.jpg

یہاں آپ کی سہولت کے لیے ایک دن کا چارٹ دیا گیا ہے۔

ناشتہ                 دو سلائس سیک کر زردی کے بغیر انڈہ

صبح                   آٹھ بجے چائے کا کپ (کم پتی والا)

دس بجے            ایک سیب یا کوئی سا پھل

بارہ بجے             ایک پیالہ سلاد کا بھر کے

دو بجے               ایک چپاتی سالن کے ساتھ

شام چار بجے      جوس کا گلاس

شام سات بجے    روٹین کے مطابق کھانا کھائیں

سونے سے پہلے  دو گلاس دودھ

چکنی اور تلی ہوئی چیزوں سے پرہیز کریں۔ سُرخ گوشت کی بجائے چکن کا استعمال کریں۔ سبزیاں اور فروٹ زیادہ کھائیں۔ پانی زیادہ پئیں اور سونے سے پہلے دودھ کے گلاس ضرور پئیں۔

چکنی جلد والے لوگ کھانے میں سبز پتوں والی سبزیاں زیادہ استعمال کریں۔ ان سبزیوں کو کچا سلاد کی شکل میں کھائیں یا اُبال کر استعمال کریں دونوں طرح مفید ہے۔ چکنی جلد کے لیے پانی میں لیموں ڈال کر پینا بہت مفید ہے اور جوسز میں مالٹے کا جوس، مسمی کا جوس اور اسٹابیری کا جوس بہت مفید ہیں۔ گرمیوں میں تربوز زیادہ کھائیں۔ گاجر کھانا یا گاجر کا جوس پینا بھی بہت مفید ہے۔ کبھی کبھار نیم کی پھکی یا نیم کا پانی پی لیا کریں۔

Steam-For-Face-Face-Steamer-Fair-Skin-Fair-Skin-Complexion-Fair-Skin-Diet-Fair-Skin-Secrets-Fairer-Skin-Glowing-Skin-Oily-Skin-Remedies-For-Fair-Tips-Fair-Skin-Tips-For-Fair.jpg

چکنی جلد اور چند گھریلو نسخے

چکنائی دور کرنے کے لیے سب سے پہلے صابن کا انتخاب ہے۔ ہربل میں نیم کا صابن تلسی Tulsi اور نیم کا صابن بازار میں عام مل جاتے ہیں جو کہ بہت مفید ہیں۔

ایک چمچ بیسن، ایک چمچ لیموں کا رس، ایک چمچ کچا دودھ مکس کرکے منہ پر لگائیں اور صابن کی طرح مل کے منہ دھو لیں۔ پورا دن منہ چکنا نہیں ہو گا۔

پھٹکری کو پانی میں اُبال لیں۔ اس پانی میں اتنا ہی گلاب کا عرق شامل کریں اور تین سے چار لیموں نچوڑ لیں۔ اس عرق کو فریج میں رکھیں اور روزانہ صبح شام روئی پہ لگا کر منہ صاف کریں یہ بہترین ٹونر ہے۔

بورک پاؤڈر دو چمچ

سفید پھٹکری دو چمچ پسی ہوئی

نیم کے پتے دو چمچ پسے ہوئے

سب کو پانی میں ڈال کر ابال لیں (گلاب کے عرق میں بھی ابال سکتے ہیں) پھر یہ ٹونر کیوبز میں ڈال کر برف بنالیں۔ اس برف کو روزانہ سونے سے پہلے منہ پر ملیں اتنا کہ چہرہ ٹھنڈا ہو جائے (برف کو ململ کے صاف کپڑے میں لپٹیں)

آئسنگ کرنے کے لیے خالی گلاب کے عرق کو بھی فریز کرسکتے ہیں۔

آئسنگ خالی برف سے بھی کی جا سکتی ہے۔

جو کا آٹا کھانے کا ایک چمچ

پھٹکری چائے کا آدھا چمچ (پسی ہوئی)

لیموں ایک عدد

ہلدی دو چٹکی

مکس کرکے منہ پر لیپ کریں۔ پندرہ منٹ بعد دھولیں چکنائی ختم کرے گا اور مسام بھی بند کر دے گا۔ اس کو ہفتے میں دو بار استعمال کریں۔ جب فائدہ ہو جائے تو چھوڑ دیں ورنہ جلد زیادہ خشک ہو جائے گی۔

مالٹے کے چھلکے پیس لیں ایک چمچ (سوکھے ہوئے)

بیسن یا جو کا آٹا ایک چمچ

گلاب کے عرق میں مکس کرکے منہ پر لگائیں۔

انڈے کی سفیدی میں لیموں مکس کرکے لگانے سے بھی جلد خشک ہوگی اور مسام بند ہوں گے۔

مالٹے کے چھلکے گلاب کے عرق میں مکس کرکے بیسن بھی ڈال لیں اور نیم کے پتے بھی ابٹن کی طرح ملیں چکنائی اور داغ ختم کردیں گے۔

Try-the-product.jpg

چکنی جلد اور پروڈکٹ کا انتخاب

کوشش کریں کہ چکنی جلد پر زیادہ گھریلو اور ہر بل نسخے استعمال کریں کیونکہ وہ زیادہ مفید اور کار آمد ہیں مگر یہاں چند ٹونر اور ماسک کے بارے بھی لکھا ہوا ہے۔

چکنی جلد کے لیے کولڈ کریم کبھی استعمال نہ کریں بلکہ Milk Cleanser استعمال کریں۔

Medicated Toner استعمال کریں۔

       Medicated مسام کریم بھی بازار میں دستیاب ہیں۔

   Acne control ماسک استمعال کریں۔ یہ ماسک Medicated  بھی ہوتے ہیں۔

زیادہ تر اس جلد پر Egg white mask- Orange mask یا پھر Clay mask استعمال کیے جاتے ہیں۔

یہ ماسک کسی بھی برانڈ کے ہو سکتے ہیں۔

  سٹیم لیتے ہوئے اگر سٹمیر میں ہائیڈروجن کے چند قطرے ڈال لیں یا ڈیٹول تو بھی بہتر نتائج ملیں گے۔

oily-skin.jpg

بیوٹی سیلون اور چکنی جلد

جلد میں بے احتیاطی سب سے بڑا مسئلہ ہے۔ احتیاط کرنے سے آپ کو بہتر نتائج مل سکتے ہیں۔ سیلون پہ بھی اکثر کچھ باتوں کا خیال نہیں رکھا جاتا اور اُلٹا فائدے کی بجائے نقصان ہو جاتا ہے۔ اس لیے بہتر ہے کہ جب آپ پارلر میں فیشل لینے جائیں تو آپ خود چند باتوں کو مد نظر رکھیں۔

       بیوٹیشن نے ڈیٹول سوپ سے ہاتھ دھوئے ہیں کہ نہیں۔

    کیا وہ ہاتھوں پہ اسٹرلائزنگ Asterlizing لوشن لگاتی ہے۔

      کیا اس نے بلیک ہیڈز پن وغیرہ کو Starliz کیا ہے۔ اگر نہیں تو آپ اسکو یاد کروائیں۔

   کیا اس کے سٹیمر میں پانی بدلا گیا ہے اگر نہیں تو آپ خود کہہ کر بدلوا لیں اور اس میں ڈیٹول بھی ڈلوالیں

      فیشل اور Bleach ایک ہی دن میں مت کروائیں بے شک آپ کی بیوٹیشن کہتی ہے۔

     فیشل کروانے کے بعد دھوپ میں فوراً جانے سے پرہیز کریں۔

اگر آپ ان باتوں کو مدنظر رکھیں گے تو یقیناً آپ مکمل طور پر اپنی جلد کے مسائل پر قابو پالیں گی۔ کیونکہ چکنی جلد دراصل ایک بیماری ہے۔ اسے آپ چھوتی بیماری بھی کہہ سکتے ہیں۔ اس لیے ان احتیاطی تدابیر سے اگر آپ بچ جائیں تو سمجھیں آپ کو یہ بیماری نہیں ہوگی۔

Skin-Care-Products-for-Taking-Care.jpg

اپنی جلد کی اس چارٹ کے مطابق روزانہ حفاظت کریں

 

پروڈکٹ چکنی جلد خشک جلد حساس جلد نارمل جلد
فیشل سکرپ ہفتے میں ایک بار ہفتے میں ایک بار سکرب استعمال نہ کریں ہفتے میں ایک بار
ماسک ہر پانچ دن بعد  ہفتے میں ایک بار  مہینے میں دو بار ہفتے میں ایک بار
کلینزنگ ملک ہرروز دو بار  ہرروز دو بار کلینزنگ مت لگائیں ہفتے میں دوبار
سٹیم دو ہفتے بعد ہفتے میں ایک بار دو ہفتے بعد ہفتے بعد
کلینزنگ مساج دو ہفتے بعد ہفتے بعد دو ہفتے بعد ہفتے بعد
ٹونر ہر روز دو مرتبہ خاص کر سونے سے پہلے روزانہ ایک بار روزانہ ایک بار

روزانہ ایک بار