Diet

جانیئے زیتون کے چند حیرت انگیز فوائد

قدیم مصری شہریوں کی جانب سے طبی مقاصد کے لیے استعمال کیے جانے والے زیتون کے پتوں کو کبھی طاقت کی علامت تصور کیا جاتا تھا۔ اس کا استعمال اب بھی متبادل طبی معالجوں کی جانب سے کیاجاتا ہے، جن کا ماننا ہے کہ زیتون کا پھل، پتے اور تیل درج ذیل میں دیئے گئے فوائد کے حامل ہیں۔

2

موسمی بیماریوں سے بچاؤ

زیتون کے پتوں کو کچلنے کے بعد ایک برتن میں پکالیں اور اسے اٹھنے والی بھانپ میں دن میں دو بار منہ ڈال کر کچھ مںٹ تک سانس لیں۔ اس عمل سے سردی، گلے کی خرابی، سانس کی نالی میں رکاوٹ اور دمے جیسے امراض کی تکلیف میں کمی آتی ہے۔

3

آدھے سر کے درد کا علاج

درد شقیقہ (آدھے سر کے درد) سے دو چار افراد زیتون کے گرم تیل کو اپنی پلکوں پر لگا کر مساج کریں۔ اس سے اعصاب کو آرام ملے گا اور درد سے نجات حاصل مل سکے گی۔

4

دل کی صحت کو بہتر کرتا ہے

امراضِ قلب کے معالجین ایسے لوگوں کو جو دل کی بیماریوں میں مبتلا ہوں انہیں زیتون کے تیل کا زیادہ سے زیادہ استعمال کرنے کی تجویز کرتے ہیں۔ اس تیل کا استعمال بلڈ پریشر اور کولیسٹرول کی سطح کو بہتر رکھتا ہے۔ ہر صبح تیل کے چند قطرے پینے سے شریانوں کی صفائی ہوتی ہے جبکہ دل کی جانب جانے والی شریان میں خون کی فراہمی میں بھی اضافہ ہوتا ہے۔

Hair beauty

خوبصورت اور صحت مند بال

زیتون کے تیل کا لیموں کے رس کے ساتھ پیسٹ بنا کر بالوں پر لگایا جائے، تو اس سے بالوں کے گرنے سے نجات حاصل ہو سکتی ہے، ساتھ ساتھ خشکی سے بھی چھٹکارا مل سکتا ہے۔ لمبے بالوں کے لیے بھی زیتون کا تیل کافی مفید ہے۔

6

چمک دار جلد کے لیے

زیتون کے تیل کے پتوں کے عرق سے نکالی جانے والی چکنائی آئلی اور کیل مہاسوں سے متاثرہ جلد کے لیے مثالی نمی فراہم کرتی ہے، جس کی وجہ اس کے اندر موجود ایسی خصوصیات ہیں، جو جلد کی لچک کو بحال کرتے ہوئے، جھریوں کی روک تھام کرتی ہیں۔ حال ہی میں کی گئیں کچھ تحقیقی رپورٹس کے مطابق زیتون کا تیل جلد کے کینسر سے بھی بچا سکتا ہے۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s